تیونس میں یوسف القرضاوی کے خلاف مقدمہ

ابن قاسم نے 'خبریں' میں ‏مئی 11, 2012 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. ابن قاسم

    ابن قاسم محسن

    شمولیت:
    ‏اگست 8, 2011
    پیغامات:
    1,717

    دہشت گردی کے فروغ کا الزام
    تیولس-10 مئی (اے ایف پی) تیونس کے ایک وکیل، پیرس میں رابطہ عالم اسلامی کے رکن اور طرابلس میں دعوت اسلامی کے مشیر نے قطر کے مفتی اعظم اور معروف دینی اسکالر ڈاکٹر یوسف القرضاوی کو دہشت گرد قرار دے کر ان کے خلاف تیونس کی ایک عدالت میں مقدمہ قائم کیا ہے۔ منگل کے روز شیخ القرضاوی کے خلاف دی گئی درخواست میں ان پر الزام عائد کیا گیا ہے کہ وہ اقوام کے درمیان دہشت گردی اور فتنہ فساد کی ترغیب دے رہے ہیں۔ خیال رہے کہ یہ مقدمہ ایک ایسے وقت میں دائر کیا گیا ہے جب حال ہی میں ڈاکٹر القرضاوی کے خلاف درخواست گزاروکیل محمد بکار نے کہا کہ انہوں نے شیخ القرضاوی کے خلاف مقدمہ تیونس کے ایک شہری کے طور پر دائر کرایا ہے۔ نیز وہ ایک قانون دان ہیں۔ بہ قول ان کے القرضاوی کی تیونس آمد یک سازش تھی اور وہ ملک کی سلامتی اور خود مختاری کے لئے سنگین خطرہ ہیں۔ بکار نے کہا کہ ان کے پاس ڈاکٹر یوسف القرضاوی کے دہشت گردی کے فروغ میں ملوث ہونے کے بارے میں دلائل اور شواہد کے انبار ہیں۔

    بشکریہ: اعتماد اردو 11 مئی​
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  2. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,485
    رابطہ کے ركن روابط منقطع كرنا چاہ رہے ہيں ، غريب ۔
    يہ حقيقت ہے كہ يوسف قرضاوى نے خود كش يا فدائى حملوں كو جائز قرار ديا تھا ليكن فلسطين كى حد تك ۔
     
  3. محمد آصف مغل

    محمد آصف مغل -: منتظر :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 18, 2011
    پیغامات:
    3,847
    اللہ تعالی تمام ایمان والوں کی حفاظت فرمائے۔ دین اسلام جو سراسر حق ہے، اسی کے لئے زندگی اور اسی پر قائم رکھتے ہوئے شہادت کی موت سے نوازے۔ آمین۔
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں