بارش کے موقع پرمغرب وعشاءقصراورجمع کے ساتہ پڑھنے کے متعلق

followsalaf نے 'آپ کے سوال / ہمارے جواب' میں ‏دسمبر 17, 2012 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. followsalaf

    followsalaf -: محسن :-

    شمولیت:
    ‏مارچ 28, 2011
    پیغامات:
    236
    السلام علیکم،

    کیا بارش کے مو قع پر مغرب کے ساتھ عشاءکی نماز قصر سے پڑھی جاسکتی ہے (مغرب کی تین رکعات اور عشاء کی دو(؟؟؟ اگر ہاں تو مہربانی فرماکر دلیل مہیا کردیں


    جزاک اللہ خیرا
     
  2. رفیق طاھر

    رفیق طاھر علمی نگران

    رکن انتظامیہ

    ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏جولائی 20, 2008
    پیغامات:
    7,938
    مقیم آدمی کسی بھی صورت میں نہ تو تقدیما یا تأخیرا جمع کر سکتا ہے اور نہ ہی قصر!
    ہاں بلا عذر زندگی میں کبھی کبھار صورۃ دو نمازوں کو جمع کر سکتا ہے ۔

    بارش کے موقع پر جو طریقہ سنت نبویہ سے ثابت ہے اسے ہی اپنایا جائے ۔ اور وہ یہ ہے کہ مؤذن حی على الصلاۃ اور حی على الفلاح کی جگہ ألا صلوا فی الرحال یا صلوا فی بیوتکم کہے ۔ اور لوگ نمازیں گھروں میں ہی پڑھ لیں ۔
     
  3. followsalaf

    followsalaf -: محسن :-

    شمولیت:
    ‏مارچ 28, 2011
    پیغامات:
    236
    جزاک اللہ خیرا!

    شیخ ان جوابات کے دلایل مع ترجمہ مل جایں تو ہم جیسے طالب علموں کیلیے اسانی ہوگی۔
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں