خودی کو نگہ رکھ ، ایازی نہ کر

عائشہ نے 'نقد و نظر' میں ‏اگست 6, 2013 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. عائشہ

    عائشہ ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏مارچ 30, 2009
    پیغامات:
    24,485
    شُنیدم بیتکے از مردِ پیرے
    کُہن فرزانہء روشن ضمیرے
    اگر خود را بنا داری نگہداشت
    در گیتی رابگیرو آن فقیرے

    ایک بزرگ نے جو بڑے ہی عقل مند ، روشن ضمیر اور صاحبِ باطن تھے مجھے ایک نہایت ہی قیمتی بات بتائی انہوں نے کہا :
    " سنو اگر کوئی مسلمان نادار اور مفلس ہو اسے تن ڈھانپنے کو کپڑا میسر ہو نہ پیٹ بھرنے کو روٹی ، لیکن اس ناداری اور مفلسی کی حالت میں وہ اپنی خودی کی حفاظت کر سکے ، کسی کے آگے دستِ سوال دراز نہ کرے اور اپنی کسی ضرورت کے سلسلے میں کوئی توقع نہ رکھے تو وہ ظاہری طور پر فقر اور مفلس و نادار ہونے کے باوجود ایک دن ساری کائنات پر حکمران ہو جائے گا بلکہ اس دنیا کے علاوہ عقبی کا بھی مالک بن جائے گا۔ "
    علامہ اقبال نےاس رباعی میں خودی کی نگہداشت اور حفاظت کی اہمیت پر زور دیا ہے ۔ وہ مسلمان نوجوانوں کو خودی بلند کرنے کے ساتھ ساتھ خودی کی حفاظت کی تلقین بھی کرتے ہیں ۔ یہاں انہوں نے ایک روشن ضمیر اور صاحبِ باطن بزرگ کی بات کے حوالے سے یہ بتایا ہے کہ مسلمان چاہے کتنی ہی مفلسی کا شکار ہو چاہے وہ نانِ شبینہ کا بھی محتاج ہو لیکن اسے چاہیے کہ کسی بھی حال میں کسی کے سامنے دست سوال دراز نہ کرے ۔ اگر وہ اپنی ضرورت کے لیے کسی کے آگے ہاتھ نہیں پھیلاتا اور ناداری کی حالت میں بھی اپنی خودی کی حفاظت کرتا ہے تو ایک دن دونوں جہان اس کے قبضہ و تصرف میں آ جائیں گے ۔
    قرونِ اولی کے مسلمانوں اور تمام بزرگان دین کی شانِ امتیاز یہی ہے کہ انہوں نے فقر و فاقہ میں زندگی بسر کی لیکن بادشاہوں اور وقت کے چھوٹے بڑے حکمرانوں کے آگے کبھی ہاتھ نہیں پھیلایا ۔ دستِ سوال دراز کرنا تو بڑی بات ہے اگر کسی بادشاہ یا حکمران نے کوئی جاگیر یا دولت از خود پیش کی تو بھی اسے قبول کرنے سے انکار کر دیا ، اس لیے کہ انہیں فقر و فاقہ کی زندگی گوارا تھی مگر اپنی خودی کی تذلیل گوارا نہ تھی ۔ اپنی خودی کی اسی نگہداشت نے انہیں اور ان کی بارگاہوں کو ایک عالم کا مرجع بنا دیا تھا۔
    خودی کی حفاظت و نگہداشت پر زور دیتے ہوئے علامہ اقبال ساقی نامہ میں کہتے ہیں :

    خودی کے نگہ بان کو ہے زہرِناب
    وہ ناں جس سے جاتی رہے اس کی آب

    وہی ناں ہے اس کے لیے ارجمند
    رہے جس سے دنیا میں گردن بلند

    فرد فالِ محمود سے در گزر
    خودی کو نگہ رکھ ، ایازی نہ کر

    حکایاتِ اقبال از پروفیسر محمد یونس حسرت
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  2. زبیراحمد

    زبیراحمد -: ماہر :-

    شمولیت:
    ‏اپریل 29, 2009
    پیغامات:
    3,446
    شیئرنگ کاشکریہ
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں