ان کی نظروں میں سب برابر ہیں

sfaseehrabbani نے 'شعری مجلس' میں ‏نومبر 10, 2013 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. sfaseehrabbani

    sfaseehrabbani معروف اردو شاعر

    شمولیت:
    ‏نومبر 17, 2010
    پیغامات:
    267
    طرحی غزل

    ان کی نظروں میں سب برابر ہیں
    آئنے بھی عجب قلندر ہیں

    کوئی ہیرے ہیں کوئی کنکر ہیں
    یہ بھی پتھر ہیں، وہ بھی پتھر ہیں

    دستِ قدرت نے مرتبہ بخشا
    یہ جواہر بھی ورنہ پتھر ہیں

    ڈوب جاتا ہے دیکھنے والا
    اس کی آنکھیں نہیں سمندر ہیں

    ان کو باہر کیا خبر ہو گی
    وہ جو قصرِ انا کے اندر ہیں

    گرچہ دنیا سے رغبتیں ہیں بہت
    لوگ اپنے تئیں قلندر ہیں

    خواب کی گھاس بھی نہیں اگتی
    میری نیندیں سدا کی بنجر ہیں

    مجھ کو ہر دم اڑائے پھرتی ہیں
    یہ مری خواہشیں نہیں، پَر ہیں

    خامشی ہے ہنر ہمارا فصیح
    ہم نئے دور کے سخنور ہیں


    شاہین فصیح ربانی
     
  2. azharm

    azharm -: مشاق :-

    شمولیت:
    ‏مئی 28, 2012
    پیغامات:
    449
    اھلا و سھلا مرحبا فصیح صاحب
    بہت خوب جناب
     
  3. sfaseehrabbani

    sfaseehrabbani معروف اردو شاعر

    شمولیت:
    ‏نومبر 17, 2010
    پیغامات:
    267
    شکرآ اظہر صاحب، بہت نوازش
     
  4. sfaseehrabbani

    sfaseehrabbani معروف اردو شاعر

    شمولیت:
    ‏نومبر 17, 2010
    پیغامات:
    267
    ایک شعر کا اضافہ

    چاہئیں کچھ تو ظاہری اسباب
    اور ہم قائلِ مقدر ہیں
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں