اے صنم، تُو خدا نہ بن جانا

azharm نے 'شعری مجلس' میں ‏مارچ 15, 2014 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. azharm

    azharm -: مشاق :-

    شمولیت:
    ‏مئی 28, 2012
    پیغامات:
    449


    اے صنم، تُو خدا نہ بن جانا
    ایک ہے، دوسرا نہ بن جانا

    اب تو عادت سی ہو گئی تیری
    درد رہنا، دوا نہ بن جانا

    مجھ کو چلنا ہے اپنے رستے پر
    راہ میں التجا نہ بن جانا

    زندگی کے کئی مقاصد ہیں
    صرف تُو مدعا نہ بن جانا

    لفظ اپنا بھرم ہی کھو دیں گے
    رہزنو، رہنما نہ بن جانا

    دے سکو گر قرار دے دینا
    آرزو سے سزا نہ بن جانا

    آشنائی کے زخم ہیں اظہر
    تُو بھی اب آشنا نہ بن جانا
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں