کیا امام بخاری نے الا ملکہ کہ کر وجھہ کی تاویل کی ھے؟

يوسف أظهر نے 'آپ کے سوال / ہمارے جواب' میں ‏اپریل 9, 2015 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. يوسف أظهر

    يوسف أظهر -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏مارچ 3, 2015
    پیغامات:
    167
    س-2 الصحیح للبخاری میں کتاب التفسیر کے اندر سورۃ القصص کی ایت کل شئ ھالک الا وجھہ کی تفیسر کرتے ہو امام بخاری رحمہ اللہ کھتے ہیں الا ملکہ ویقال: الا ما ارید بہ وجہ اللہ۔
    کیا امام بخاری رحمہ اللہ البارئ نے الا ملکہ کھے کر وجھہ کی تویل کی ھے؟ بعض الناس کھتے ہیں کے امام بخاری نے یا تویل کی ھے کیا ان کی بات صحیح ھے ؟
     
  2. رفیق طاھر

    رفیق طاھر علمی نگران

    رکن انتظامیہ

    ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏جولائی 20, 2008
    پیغامات:
    7,940
    امام بخاری نے معنى نہیں تفسیر ذکر فرمائی ہے۔ وجہ کا معنى وجہ یعنی چہرہ ہی ہے ، تو اس پر اعتراض ہوتا ہے کہ چہرہ کے سوا باقی چیزیں عرش لوح قلم ۔۔۔ الخ سب ہلاک ہو جائیں گے تو امام بخاری نے اس اعتراض کا جواب دیا ہے کہ اللہ کا ملک باقی رہنے والا ہے ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں