گنجائشوں کا خواستگار سربراہ مملکت

عبدالرّحمن نے 'حالاتِ حاضرہ' میں ‏نومبر 27, 2015 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. عبدالرّحمن

    عبدالرّحمن رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏مارچ 7, 2015
    پیغامات:
    7
    غالبا یہ ۱۹۸۵ء کی بات ہے.
    اسلام آباد کو اس وقت جنگل سمجھا جاتا تھا.
    بات بھی درست تھی..
    مغرب کے بعد کوئی ٹیکسی والا زیروپوائنٹ سے فیض آباد جانے کو آمادہ نہ ہوتا تھا..
    خوف کا یہ عالم ہوتا تھا کہ ٹیکسی والے اپنے ہمراہ ایک محافظ کو بھی بٹھائے ہوتے تھے..
    سڑکوں پر جنگلی جانوروں کا راج ہوتا تھا..
    والد محترم نے زیروپوائنٹ کے قریب سیکٹر جی ایٹ فور میں مسجد امام بخاری (رح) کی بنیاد رکھی. میرے کئی عزیز رشتہ دار بنیادی دینی تعلیم کے حصول کے لئے مسجد سے منسلکہ ادارے میں مقیم تھے. جمعہ کو ہفتہ وار تعطیل ہوتی تو نماز فجر کی ادائیگی کے بعد ہم سب کزنز شاہراہ فیصل پر ورزش کرتے کرتے فیصل مسجد پہنچ جاتے. اور تعمیراتی کاموں کا بھی بغور”جائزہ“ لیتے رہتے تھے. یوں ہم ورزش بھی کر لیتے، تفریح بھی ہو جاتی اور دلچسپی کو بھی تسکین مل جایا کرتی تھی..

    آج اس تصویر نے مجھے تیس سال پیچھے اس خوبصورت اور سادہ دور کے یہ پرکشش مناظر یاد کروا دیئے... یہ مناظر آج بھی اتنے ہی پرکشش محسوس ہو رہے ہیں...
    .
    ان مناظر کی کشش اپنی جگہ، پر گہما گہمی اور ترقی کے باوجود آج اس شہر میں وہ کشش نہیں.
    .
    شاید...
    اس لیے کہ اب اس شہر کے قدرتی حسن کو تباہ کر دیا گیا ہے..
    ناجائز تعمیرات اور تجاوزات نے پلاننگ کی دھجیاں بکھیر کے رکھ دی ہیں..
    ..
    یا
    پھر..
    اُس وقت کا حاکم اســــــــــلام کو آباد کرنے
    کی کوششوں میں مصروف تھا..
    اور
    آج کا سربراہ مملکت اسلام میں”نقب“لگانے کی گنجائشوں کا خواستگار...
    [​IMG]
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 3
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں