عقائد کی کتابوں میں فقہی مسائل کیوں ہوتے ہیں؟

قرطبی نے 'آپ کے سوال / ہمارے جواب' میں ‏دسمبر 23, 2015 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. قرطبی

    قرطبی رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏دسمبر 23, 2015
    پیغامات:
    59
    عقائد کی کتابوں میں فقی مسائل کیوں ہوتے ہیں؟ جبکہ علماء اصلاح فقہ کہتے ہیں احکام شرعیہ کا ایسا علم جو
    تفصیلی دلائل سے حاصل ہو (الوجیز )
    مزید فرماتے ہیں ہیں
    احکام شرعیہ میں عملیہ کی شرط یہی ہے کہ ان کا تعلق مکلفین کے فعل کے ساتھ ہو ،جیسے نماز ۔خرید۔فروخت اور جرائم،غرضیکہ عبادات اور معاملات اس میں داخل ہونگے ۔البتہ عقیدے سے متعلق احکام کا تعلق نہ ہوگا۔(الوجیز )

    فیہ مسائل
    ٭ جو بھی کسی صالح اور بزرگ کی قبر کے پاس عبادت کے لئے مسجد تعمیر کرتا ہے، اگرچہ اُس کی نیت صحیح ہو وہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے تہدیدی فرمان کی زد میںآتا ہے۔ ٭ کسی صالح شخص کی تصویر بنانے کی حرمت میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی سخت ترین وعید ہے۔٭ رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے شدید تہدیدی کلمات میں عبرت و نصیحت کا یہ پہلو پنہاں ہے کہ ابتداء میں آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے اس مسئلہ کی نرم الفاظ میں وضاحت فرمائی اور پھر وفات سے پانچ روز پہلے اس کی سختی سے تردید فرمائی۔ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے اِسی پر بس نہیں کی (بلکہ وفات کے وقت ایسے لوگوں کو جو قبروں میں مساجد تعمیر کرتے ہیں، ملعون قرار دیا)۔ ٭ رسولِ اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنی قبر پر تعمیر مسجد سے منع فرمایا حالانکہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی قبر اُس وقت موجود نہ تھی۔٭ قبروں پر مسجد بنانا اور اُن میں عبادت کرنا یہود و نصاریٰ کا طریقہ تھا۔ ٭ اسی بنا پر رسولِ کریم صلی اللہ علیہ وسلم نے یہود و نصاریٰ کو ملعون قرار دیا۔ ٭ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا یہود و نصاریٰ پر لعنت کرنے کا اصل مطلب یہ تھا کہ مسلمان آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی قبر پر اس قسم کے افعال کا ارتکاب نہ کریں۔٭ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی قبر کو ظاہر اور کھلا نہ رکھنے کا سبب اور مصلحت۔ ٭ قبر کو عبادت گاہ بنانے کے نقصانات کا تفصیل سے جائزہ لینا۔ ٭ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے قبروں پر مساجد تعمیر کرنے والوں اور اُن بدترین لوگوں کو جن کی زندگی میں قیامت برپا ہو گی، ایک ہی مقام دیا ہے۔ چنانچہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے شرک کے وقوع سے پہلے ہی اُس کے اسباب پر روشنی ڈال دی۔٭ رحمت عالم صلی اللہ علیہ وسلم نے وفات سے صرف پانچ روز قبل اس فتنے کے بارے میں صحابہ کرام رضی اللہ عنہم کو آگاہ فرمایا۔ اہل بدعت کے سب سے زیادہ شریر دو فرقوں کی تردید۔ اور بعض اہل علم نے تو ان کو بہتر فرقوں سے بھی خارج قرار دیا ہے۔ ان دو فرقوں میں ایک رافضی (شیعہ) اور دوسرا جہمیہ ہے۔ خصوصاً رافضیوں کی وجہ سے مسلمانوں میں شرک اور قبروں کی عبادت کے فتنے نے جنم لیا اور یہی وہ فرقہ ہے جس نے سب سے پہلے قبروں پر مساجد تعمیر کرنے کا سلسلہ شروع کیا تھا۔٭ اس باب میں یہ بھی بیان ہوا ہے کہ رحمت دو عالم صلی اللہ علیہ وسلم کو وفات کے وقت سخت تکلیف برداشت کرنی پڑی۔ ٭ رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کو خلت کی عظمت و بزرگی سے نوازا گیا ہے۔ ٭ اس بات کی وضاحت کہ خلت کا مقام محبت سے اونچا ہے۔ ٭ اس بات کی بھی تصریح کہ سیدنا ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ تمام صحابہ رضی اللہ عنہم سے افضل ہیں۔ ٭ رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کا اپنی زندگی میں ہی صدیق اکبر رضی اللہ عنہ کی خلافت کی طرف اشارہ فرمانا۔
    (ھِدایۃ المُستفید اُردُو ترجمہ فتح المجید شرح کتابُ التوحید)
     
  2. رفیق طاھر

    رفیق طاھر علمی نگران

    رکن انتظامیہ

    ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏جولائی 20, 2008
    پیغامات:
    7,939
    ان تمام تر مسائل کا تعلق عقیدہ سے ہے۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
    • مفید مفید x 1
  3. قرطبی

    قرطبی رکن اردو مجلس

    شمولیت:
    ‏دسمبر 23, 2015
    پیغامات:
    59
    توپھر لفظ فیہ کی عبارت سے کیا مراد ہے ۔فیہ اکثر فروعی مسائل کی کتابوں میں بھی لکھا ہوتا ہے
     
  4. رفیق طاھر

    رفیق طاھر علمی نگران

    رکن انتظامیہ

    ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏جولائی 20, 2008
    پیغامات:
    7,939
    فیہ کا معنى ہے اس میں کچھ مسائل ہیں ۔ اگر بات عقائد کی ہوگی تو وہ مسائل عقائد کے ہونگے ۔
     
    • متفق متفق x 1
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں