یہ بحران سیاسی ہے یا فکری!!!

محمد عرفان نے 'مضامين ، كالم ، تجزئیے' میں ‏جون 9, 2017 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. محمد عرفان

    محمد عرفان -: ماہر :-

    شمولیت:
    ‏جولائی 16, 2010
    پیغامات:
    764
    یہ بحران سیاسی ہے کہ فکری ؟؟


    خبر پرانی ہو چکی کہ سعودی عرب سمیت کئ ممالک نے قطر کے بائیکاٹ کا اعلان کیاہے
    خطے کی سیاست اور سیاست میں درپیش صورت حال کے پیش نظر یہ اقدام اپنے مضمرات رکھتا ہے... سعودی عرب نے اپنی طرف سے اس کی چند وجوہات گنائی ہیں
    جن میں حماس اور اخوان دو تنظیموں کی تائید کے علاوہ سعودی عرب کے خلاف داخلی و بیرونی طور پر بے چینی کو عام کرنے اور القاعدہ جیسی تنظیموں کو مدد دینا شامل ہے.....
    اس بائیکاٹ سے متعلق پسند یا نا پسندیدگی اور ان وجوہات کی معقولیت سے متعلق آدمی کی ذاتی رائے کچھ بھی ہو سکتی ہے جس کا دار و مدار اس کی معلومات'خطہ کی موجودہ سیاست پر اسکی نظر اور خود اسکی اپنی معقول ذہنیت پر ہے

    مگر حیرت انگیز طور پر حسب معمول تحریکی احباب نے ایک بار پھر اسے کفر و اسلام کے معرکہ کی شکل دیدی.....

    سعودی عرب سے متعلق ہر معاملہ کو پہلے کفر و اسلام کے معاملہ کا رنگ دینا پھر اپنے قلمی جہاد سے اس "کفرستان" کو صفحہء ہستی سے مٹا دینے کے لئے ایڑی چوٹی کا زور لگانا بر صغیر کے تحریکیوں کا محبوب ترین مشغلہ ہے....

    مسائل کو یہ انتہا پسندانہ رخ دینا تحریکیوں کے غلو اور اس فکر کی تکفیری فکر سے وابستگی کا سب سے بین ثبوت ہے......

    دور حاضر میں ہر ملک اپنے مصالح کے تحت اپنی پالیسیاں بناتا اور اپناتا ہے... آپ اس سے اختلاف کیجئے مگر ایسا بھی نہیں کہ آپ کو معرکہء کفر و اسلام کے سوا کچھ نظر نہ آئے ....
    تکفیری سوچ کا یہ دھارا الإخوان المسلمون کے اندر بھی ہے اور بر صغیر کے تحریکیوں کے اندر بھی.... سید قطب سے لیکر جدید دور کے اخوانیوں تک سب مسلم معاشرہ کو جاہلی معاشرہ کہتے اور لکھتے نہیں تھکتے.....
    اور بر صغیر کے باقاعدہ یا بے قاعدہ تحریکیوں کی تحریریں بھی اس سے پاک نہیں ہیں...
    ایک صاحب ہیں یاسر ندیم وہ لکھتے ہیں...
    "..... یہ دجالی نظام کی تیاری ہے اور اس نظام کے عروج پر آنے میں جو رکاوٹیں ہیں ان کو جلد از جلد دور کیا جارہا ہے۔ آج قطر کا نمبر ہے کل ترکی کا، اگر یہ دونوں ممالک دجالی نظام کا حصہ نہ بنے تو مصر میں جو ہوا وہ یہاں ہونا ہے...."


    یہ تحریر ایک طرف پورے عالم اسلام کو اخوت و بھائی چارگی کی دعوت دینے کے دعویدار تحریکیوں کی فکری عصبیت کا منہ بولتا ثبوت ہے کہ قطر اور ترکی جو اخوانی فکر کے مؤید و ہمدرد ہیں انہیں کلین چٹ دی جا رہی ہے تو دوسری طرف تکفیری رجحانات کو بڑھاوا دینے والی ان تحریکیوں کی سوچ کی آئینہ دار ہے کہ مذکورہ دو ملکوں کے علاوہ سارے عالم اسلام کو دجالی نظام کا حصہ قرار دیاجا رہا ہے...
    سارا عالم اسلام اگر دجالی نظام بننے جا رہا ہے تو پھر اس سے لڑنا عین جہاد ہے اور یہی "داعش یا اسلامک اسٹیٹ "کر رہی ہے.... یہ تکفیری رجحان نہیں تو اور کیا ہے ..
    بین السطور لطف کی بات یہ ہے کہ دجالی نظام کے خلاف لکھنے والے یہ مجاہد اسی دجالی نظام کے باوا آدم امریکہ کے کسی ایئر کنڈیشنڈ روم میں بیٹھ کر یہ فریضہ انجام دے رہے ہیں.....

    ایک اور صاحب ہیں ترجمان جماعت... ہر ایسے موقعے پر اردو میں لکھتے ہیں اور اردو ہی میں پورے عالم اسلام کو یا تو للکارتے ہیں یا بھولا سبق یاد دلاتے ہیں....
    ملاحظہ فرمائیں انکی تحریر کا ایک اقتباس...

    "....
    اے اہلِ حرم ! تمھیں یہ کیا ہوگیا ہے ؟
    تم اللہ کے دشمنوں اور اس کے باغیوں کو اپنا دوست بناتے ہو اور اللہ کا کلمہ بلند کرنے والوں کو دہشت گرد قرار دیتے ہو _
    تمھیں اہل ایمان کے لیے نرم اور اہل کفر کے معاملے میں سخت ہونا چاہیے تھا ، لیکن تم اہلِ ایمان کے لیے فولاد اور اہلِ کفر کے لیے موم بن گئے ہو _
    تمھیں اللہ تعالی نے حرم کا پاسباں بنایا ہے _تم سمجھتے ہو کہ حاجیوں کو پانی پلا کر اور حرم کے انتظامات کرکے تمھیں ہر طرح کی بد اعمالیوں کی چھوٹ مل گئی ہے ، لیکن یہ تمھاری خام خیالی ہے _
    اللہ تعالٰی کا ارشاد ہے :
    أَجَعَلْتُمْ سِقَايَةَ الْحَاجِّ وَعِمَارَةَ الْمَسْجِدِ الْحَرَامِ كَمَنْ آمَنَ بِاللَّهِ وَالْيَوْمِ الْآخِرِ وَجَاهَدَ فِي سَبِيلِ اللَّهِ ۚ لَا يَسْتَوُونَ عِنْدَ اللَّهِ ۗ وَاللَّهُ لَا يَهْدِي الْقَوْمَ الظَّالِمِينَ (التوبۃ :19)
    " کیا تم نے حاجیوں کو پانی پلانے اور مسجد حرام کی مجاوری کرنے کو اس شخص کے کام کے برابر ٹھہرا لیا ہے جو ایمان لایا اللہ پر اور روزِ آخر پر اور جس نے جاں فشانی کی اللہ کی راہ میں _اللہ کے نزدیک یہ دونوں برابر نہیں ہیں اور اللہ ظالموں کی رہ نمائی نہیں کرتا _" (محمد رضی الاسلام ندوی)"

    یہ دیکھیں.... ابن عباس رضی اللہ عنہ نے خارجی فکر کا خاصہ بتلایا تھا کہ جو آیتیں کفار کے سلسلے میں نازل ہوئیں انہیں مسلمانوں پر چسپاں کرتے ہیں.... جناب نے بھی یہی گل کھلائے ہیں... ایمان والے پاسبان حرم پر ایمان سے عاری پاسبانوں کے سلسلے میں نازل شدہ آیتیں چسپاں کر رہے ہیں... یہ محض اتفاق ہے یا اس فکری وحدت کا شاخصانہ... ؟؟؟
    جناب والا ہر ملک کی اپنی پالیسیاں ہیں اسکی سیاست ہے اور ہر کسی کی چھلنی میں چھید ہیں انکی سیاست کو سمجھو تو بات سمجھ میں آئے.
    .ورنہ آپ کے پیمانے سے ناپیں تو پھر آپکے اپنے بھی نہ بچ پائیں....

    کوئی اس تضاد کی توجیہ کرے کہ
    ملوکیت سعودی عرب کی ہو تو "کفر" اور اگر قطر کی ہو تو "اسلام" ؟؟؟؟
    سعودی عرب کی قربت امریکہ سے ہو تو "کفر" اور ترکی کی قربت اسرائیل سے ہو تو "اسلام" اور اقامت دین کی بنیاد... ؟؟؟

    امریکی فوجی اڈے سعودی عرب میں تھے تو زبانیں گز گز بھر لمبی اور اب قطر میں ہیں اور سعودی عرب سے زیادہ آزاد اور آرام کے ساتھ ہیں تو زبانیں گنگ... ؟؟؟

    سعودی عرب قطر کی چال دیکھ کر بائیکاٹ کرے تو أشداء على الكفار رحماء بينهم کی نصیحت اور "امیر المؤمنین" رجب طیب اردگان کے خلاف بغاوت کرنے والے مسلمانوں کو بری طرح کچل کر رکھ دینے والوں کو شاباشی.... ؟؟؟


    تحریکیوں کی سوچ کا یہ بحران ہے کہ اعلاء کلمة اللہ کے ایک دعوے کے بعد سارا عالم ایک میدان جنگ کے سوا کچھ نہیں نظر آتا اور انکی فکر سے اختلاف کرنے والے دشمن کے آلہء کار کے سوا کچھ نہیں....

    أبو أحمد
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 2
  2. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    رکن انتظامیہ

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    15,921
    اللہ خیر کرے ۔ صلح میں خیر ہے ۔ مسئلہ قطر کے حکمران کا ہے ۔ اس کی ہٹ دہرمی کی وجہ سے حالات خراب ہورہے ہیں ۔
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں