تبلیغی جماعت میں اچھائیاں بھی تو ہیں ؟

ابوعکاشہ نے 'غیر اسلامی افکار و نظریات' میں ‏فروری 11, 2009 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    رکن انتظامیہ

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    15,921
    بسم اللہ الرحمن الرحیم​

    سوال ::
    مثال کے طور پر تبلیغی جماعت کہتی ہےکہ ہم اہلسنت و الجماعت کے منہج پر چلنا چاہتے ہیں ، لیکن ہمارے بعض ساتھیوں سے کبھی غلطی ہو جاتی ہے ؛اس بنیاد پر آپ ہم (سب ) پر کیسے حکم لگا دیتے ہیں اور (لوگوں کو ) ہم ست خبردار کرتے (اور روکتے ) ہیں ؟

    جواب ::
    تبلیغی جماعت کے بارے میں ان لوگوں نے لکھا ہے جو ان کےساتھ گئے اور انہیں پڑھا اور ان کے علاوہ بھی ان کے بارے میں بہت کچھ لکھا جا چکا ، اور ان کے یہاں موجود غلطیوں کی تشخیص کی گئی ـ آپ کو چاہیے کہ جو ان کے بارے میں لکھا گیا ہے اسے پڑھیں تاکہ اس بارے میں حکم آپ پر واضح ہو ـ

    الحمد للہ اللہ تعالٰی نے ہمیں فلاں فلاں کی اتباع سے مستغنیٰ کر دیا ہے ، ہمارے پاس طریقہ اہل سنتت والجماعت موجود ہے ہم اسے ہی لازم پکڑ یں گئے ـ تبلیغی جماعت ہو یا کوئی دوسری جماعت ہمارا ان سے کوئی لینا دینا نہیں اور نہ ہی ہمیں اس کی کوئی احتیاج ہے ، پس حق کے بعد ضلالت و گمراہی کے سوا اور کیا ہو سکتا ہے

    البتہ ان کی حقیقت کے بارے میں کئی کتابیں لکھی گئی ہیں ، آپ ان کا مطالعہ کریں تو (ان کی حقیقت ) جان جائیں گئے ــ جنھوں نے ان کے بارے میں لکھا وہ لوگ ہیں جو ان کے ساتھ گئے ، سفر کیا اور میل جول رکھا چنانچہ انھوں نے اس کے بارے میں پوری معرفت و واضح دلائل کے ساتھ لکھا ــ

    شیخ الفوازن کے تلمیذ جمال بن فریحان الحارثی اس پر تعلیق کرتے ہوئے فرماتے ہیں :
    جنھوں نے ان کے بارے میں خوب جم کر لکھا اور ان کے تمام بانڈھے پوڑ کر ان کے طریقے کو واضح کیا ان میں سے کچھ مندرجہ ذیل ہیں :

    فضیلة الشيخ سعد بن عبد الرحمن الحصين (حفظ الله ) نے اپنی کتاب بنام'حقيقة الدعوة الی اللہ تعالٰی وما اختُصت بہ جزیرة العرب ، وتقویم مناھج الدعوات السلامية الوافدة إليها ''جس کی تخریج وطبع کا اہتمام شیخ فالج بن نافع الحربی (حفظ اللہ ) نے کی اـ اس کی طبع اول کے صفحہ 70 میں بیان ہو اکہ تبلیغی فرقے کے نزدیک کلمہ توحید ''لا الہ الا اللہ کا مقصود کیا ہے :

    ''اخراج الیقین الفاسد من القلب علی الاشیاء وادخال الیقین الصحیح علی ذات اللہ ؛ انہ : لا خالق الی اللہ ، ولا رازق الا اللہ ، ولا مدبر الا اللہ
    "

    ترجمہ : '' اشیاء ( اور دنیا کی محبت وغیرہ ) پر فاسد یقین کو دلوں سے نکالنا اور اللہ تعالٰی کی ذات پر صحیح یقین کو اس میں جاگزین کرنا ؛ کہ بے شک اللی تعالٰی کے سوا کوئی خالق نہیں ، اللہ تعالٰی کے سوا کوئی رازق نہیں اور اللہ تعالٰی کے سوا کوئی مدبر نہیں ''
    اور یہ تو اس توحید ربوبیت سے کچھ بھی زیادہ نہیں جس کا نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کے دور مشرکین بھی اقرار کرتے تھے ، لیکن اس اقرار نے انہیں دائرہ اسلام داخل نہ کیا ـ

    اسی کتاب کے صفحہ 70 اور دوسری طبع میں صفحہ 81 میں فرمایا :
    ''عقید تھا ـــ آی : التبلیغ ــ: احناف فی المذاھب الفقھی ،أشعرية ما توريدة في العقيدة , جشتبة نقشبندية قادرية سهروردية في طريقة التصوف ''
    ترجمہ :: تبلیغی جماعت کا عقیدہ یہ ہے کہ فقہ میں احناف ہیں ، عقیدے میں اشعری و ماتوریدی ہیں اور طریقیت و تصوف میں چشتی ، تقشبندی ، قادری و سہروردی ہیں ـ ''
    بحوالہ ۔۔ المہند ۔۔ ۔مولانا خلیل احمد سہارنپوری

    2ــ ان کے بارے میں شیخ حمود بن عبد اللہ التویجری رحمہ اللہ نے ابھی ایک بہت ہی نفیس اور اس باب میں لاجواب کتاب لکھی ، اور یہ اس فرقے کے بارے میں لکھی جانے والی کتابوں میں سب سے جامع ہے ، کہ اس میں اس جماعت سے متعلق خود ان کی کتابوں میں سے بلکل کھلے بیانات ہیں ، اور پھر ان پر رد ہے ، اور خود ان کے اپنے ہم جماعتیوں میں سے ایسے افراد (گھر کے بھیدیوں ) وغیرہ کی گواہیاں بیان ہوئی ہوئی ہیں ، جن کا ان کے سربراہوں اور پیروکاروں سے خاص تعلق رہا ہے ــ الحمد للہ یہ کتاب '' القول البلیغ فی التحذیر من جماعتہ التبلیغ ' کے نام سے طبع ہو چکی ہے

    3ـ اسی طرح ان کے بارے میں میجر محمد اسلم رحمہ اللہ نے بھی لکھا ہے جو پاکستانی ہیں اور جامعہ اسلامیہ مدینہ منورہ سے فارغ التحصیل تھے ـ

    4ــ ان کے بارے میں شیخ ڈاکٹر محمد تقی الدین ہلالی رحمہ اللہ نے بھی ایک کتاب ''اسراج المنیر فی تنبیہ جماعتہ التبلیغ علی أخطائهم ''میں لکھا ہے ، اور یہ بھی جامع ترین کتابوں میں سے ہے جو تبلیغی فرقے کے بارے میں لکھی گئی ، یہ دراصل محمد اسلم کی کتاب کی شرح ہے ـ

    ان کتابوں نے بہت سے ایسے لوگوں پر ان کی حقیقت واضح کر دی جو اس کے دام فریب میں آچکے تھے ، پس انہوں نے اسے خیرباد کہ دیا اور اس سے خبردار کرنا شروع کر دیا ـ
    ان کی مذمت کے لئے یہی کافی ہے کہ یہ توحید کی جانب دعوت کا اہتمام نہیں کرتے بلکہ اس سے اور اس کی جانب دعوت دینے والوں سے متنفر کرتے ہیں ـ

    اپنی اصل حقیقت صوفیت کو چھپانے ولے اس فرقے کے بارے میں ایسے لوگوں نے جو اس فرقے کے دھوکے میں آگئے تھے اور ان کے ساتھ نکلے تھے بتایا : ان کے ساتھ نکلتے وقت آپ امام شیخ محمد بن عبد الوہاب رحمہ اللہ کی کتابیں تقسیم کریں مثلا کتاب التوحید پھر ان کا رد عمل دیکھیں ، اور دیکھیں کیسے ان کا تکلف بھرا حسن اخلاق و حشیت و ترش روی میں تبدیل ہو جاتا ہے اور دوستی کس طرح دشمنی ونفرت میں تبدیل ہو جاتی ہے ــ یہ ایک ایسا مجرب عمل ہے جس کے ذریعے آپ پر ان لوگوں کی حقیقت ظاہر ہوگی ـ

    سعودیہ کے سابق مفتی ، رئیس قضاتہ اور اسلامی امورشیخ محمد بن ابراہیم آل الشیخ رحمہ اللہ اپنے فتاوی و رسائل (267/1) میں فرماتے ہیں :
    ھذه الجمعية --- يعني : كلية الدعوة والتبليغ السلامية --- لا خير فيها , فإنها جمعية بدعة و ضلال و بقراءة الكتيبات – وجدتها تشتمل علي الضلال و البدعة والدعوة إلي عبادة المقبورة والشرك ---""
    ترجمہ : اس جمعیت یعنی کلیہ دعوت و تبلیغ اسلامی میں کوئی خیر نہیں ، کیونکہ یہ جمعیت بدعت و ضلالت ہے اور میں نے ان کے کتابچے پڑھے تو میں نے انھیں گمراہی ، بدعت ، قبر پرستی اور شرک کی دعوت میں مشتمل پایا ــــــ""
    (اختصارا نقل کیا گیا ، یہ فتوی بتاریخ 29/1/1382 ھجری کو صادر ہوا ''

    سعودی عرب کے سابق مفتی اعظم شیخ عبد العزیز بن عدد اللہ بن باز رحمہ اللہ مجلہ '' الدعوہ السعودیہ '' شمارہ نمبر 1438 مورخہ 3/11/1414 ھجری میں فرماتے ہیں :
    جماتہ التبلیغ لیس عندھم بصیرتہ فی مسائل العیقدہ ، فلا یجوز الخروج معھم
    الفتاوی : 231/8
    تبلیغی جماعت کو عقیدے کے مسائل میں کوئی بصیرت نہیں ، ان کے ساتھ نکلنا جائز نہیں

    اسی طرح پوچھا گیا کہ کیا یہ تبلیغی جماعت بہتر 72 ہلاک ہونے والے فرقوں میں داخل ہے ؟
    تو آپ رحمہ اللہ نے فرمایا :
    "نعم ؛ تدخل فی الثنتین و السبعین ، من خالف عقیدتہ اھل السنہ دخل فی الثنتین و السبعین ''
    المجلہ السلفیہ ''العدد : السابع ، ص 47 1422 ھجری
    ''جی بلکل ـ یہ بہتر (72) فرقوں میں داخل ہے ، جو کوئی بھی عقیدہ اہلسنت کی مخالفت کرے گا وہ ان بہتر 72 فرقوں میں داخل ہو گا "

    علامہ محدث شام شیخ محمد ناصر الدین البانی رحمہ اللہ فرماتے ہیں :
    ''جماعتہ التبلیغ لا تقوم علی منھج الکتاب و السنہ ، وماکان علیہ سلفنا الصالح ، فلا یجوز الخروج معھم ــ'
    الفتاوی الاماراتیہ

    تبلیغی جماعت منہج کتاب و سنت اور جس چیز پر سلف صالحین گامزن تھے پر قائم نہیں لٰہذا ان کےساتھ نکلنا جائز نہیں ـ

    شیخ صالح بن فوزان الفوزان (حفظ اللہ )
    مصدر :کتاب "الآجوبة المفيدة عن أسئلة المناهج الجديدة ''
    فتاوی از شیخ صالح الفوزان (حفظ اللہ )
    ترجمہ :: طارق علی بروہی
     
  2. فتاة القرآن

    فتاة القرآن -: منفرد :-

    شمولیت:
    ‏نومبر 30, 2008
    پیغامات:
    1,444
    شکریہ اس جدید معلومات کے لیہ
    جزاک اللہ خیر
     
  3. ابو محمد

    ابو محمد -: محسن :-

    شمولیت:
    ‏ستمبر 24, 2008
    پیغامات:
    132
    بارک اللہ فی علمک
     
  4. الطحاوی

    الطحاوی -: منفرد :-

    شمولیت:
    ‏دسمبر 5, 2008
    پیغامات:
    1,825
    کیوں بھائی آپ سعودی علمائ کی زیادہ تقلید نہیں کررہے ہیں۔میں نے تبلیغی جماعت کے ساتھ اچھا خاصا وقت گزارا ہے اورمیں اس پر مطمئن ہوں کہ کچھ خرابیاں تواس میں ضرور ہیں جو ہرکسی جماعت میں مرور ایام سے پیداہوتے ہیں۔ لیکن اتنی بھی زیادہ نہیں۔ لیکن کیاکہاجائے چشم عداوت ہنر کو بھی عیب بناکر پیش کرتی ہے۔
     
  5. فرحان دانش

    فرحان دانش -: مشاق :-

    شمولیت:
    ‏دسمبر 3, 2007
    پیغامات:
    434
    تبلیغی جماعت کا ایک اور کام مسلمان کو دوبارہ مسلمان کرنا بھی ہو تا ہے
     
  6. الطحاوی

    الطحاوی -: منفرد :-

    شمولیت:
    ‏دسمبر 5, 2008
    پیغامات:
    1,825
    حکم قرآنی ہے اے ایمان والو ایمان لائو
     
  7. الطحاوی

    الطحاوی -: منفرد :-

    شمولیت:
    ‏دسمبر 5, 2008
    پیغامات:
    1,825
    تبلیغی جماعت سے مجھے سب سے زیادہ اختلاف ان کے اس خیال سے ہے کہ پہلے مسلمانوں کو ٹھیک کرلیں گے۔ اس کے بعد غیرمسلمیں میں اسلام کی تبلیغ کاکام شروع کریں گے۔
    اب پتہ نہیں تبلیغی جماعت کے پاس مسلمانوں کی اصلاح کا کون سامعیار ہے کہ جس تک وہ پہنچیں گے اس کے بعد غیرمسلمین میں دعوت اسلام کاآغازکریں گے۔ اگر وہ یہ کہتے ہیں کہ پہلے تمام مسلمان نیک پرہیزگار اورمتفقی ہوجائیں توایسا ممکن نہیں ہے۔
    قرآن کریم کے مطالعہ اورتدبر سے پتہ چلتاہے کہ مسلمانوں کی اصلاح اورغیروں میں دعوت کا کام دونوں ساتھ ساتھ چل سکتاہے بلکہ ہوناچاہئے۔
    اللہ تبارک وتعالی نے حضرت موسیٰ کو فرعون کواسلام کی دعوت دینے کیلئے بھیجا اورارشاد فرمایا اذہب الی فرعون انہ طغی فرعون کی طرف جائو کیونکہ سرکش ہوگیاہے۔ لعلہ یتذکر اویخشی شاید کہ ونصیحت پکڑے اوراپنے کئے پر ڈرے۔حالانکہ اس وقت قوم بنی اسرائیل بہت سی اخلاقی بیماریوں میں مبتلاتھی۔
    اوروہ بہت سی عملی کوتاہیوں میں بھی مبتلاتھے۔
     
  8. فرحان دانش

    فرحان دانش -: مشاق :-

    شمولیت:
    ‏دسمبر 3, 2007
    پیغامات:
    434
    تبلیغی جماعت میںاگراچھائیاںہوتی تو آج پاکستان کی %2اقلیت مسلمان ہو چکی ہوتی
     
  9. ابوعکاشہ

    ابوعکاشہ منتظم

    رکن انتظامیہ

    شمولیت:
    ‏اگست 2, 2007
    پیغامات:
    15,921
    السلام علیکم !
    مجھے افسوس ہے کہ آپ کو یہ نہیں معلوم کہ ''تقلید '' کہتے کسے ہیں ۔۔
    یہ بتائیں کہ آپ مجتہد ہیں یا جاہل ؟
    دوسری بات یہ کہ ان کتابوں اور علماء کے حوالے نوٹ کر لیں اور جا کر ان جماعتوں (دیوبندی اور تبلیغی) کے اکابرین سے پوچھیں کہ کیا وہ ان علماء اور کتابوں کے بارے میں نہیں جانتے ؟
    حضرت عرض ہے کہ میرے پاس اتنا وقت نہیں کہ آپ کی ان باتوں کا جواب دوں ــ میں نے پہلے بھی کہا تھا کہ آپ تھوڑی سی تحقیق کر لیں تو ان شاء اللہ اصلاح ہو جائے گی ـــ اگر میں نے کچھ لکھا تو بہت کچھ سامنے آئے گا ـ ہو سکتا ہے کہ پھر آپ کو برا لگے ـ
     
  10. مخلص

    مخلص -: محسن :-

    شمولیت:
    ‏اپریل 24, 2009
    پیغامات:
    291
    تبلیغی جماعت خالص مذہبی جماعت ھے ان پر اعتراض کرنے سے پہلے ہمیں اپنی اپنی جماعتی پر بھی نظر دوڑانی چاہیے کیون کہ ھر جماعت میں اچھائیاں بھی ھے اور کچھ خرابیاں بھی لہذا تنقید برائے تنقید کے تنقید برائے اصلاح ھونے چاہیے ،کس جماعت میں غلطی نہیں کیا اھلحدیثوں میں کوئی غلطی نہیں ۔ شیعوں میں بریلویوں میں یا دوسرے جتنے فرقے ھیں ان میں کوئی غلطی نہیں ھے ،
     
  11. مون لائیٹ آفریدی

    مون لائیٹ آفریدی -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏ستمبر 22, 2007
    پیغامات:
    4,799
    یہی تو موقع ہے جہاں آپ ان مذکورہ کے عقائد میں جو غلطیاں ہیں ، کو آشکارہ کریں ۔ شکریہ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
    ہمیں انتظار رہے گا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔
     
  12. مخلص

    مخلص -: محسن :-

    شمولیت:
    ‏اپریل 24, 2009
    پیغامات:
    291
    ان گروھوں کی غلطیوں کے پیچھے لگ کر ان پر تنقید کرتے رہیں گے تو خطرہ ھے کہ کھیں ایک اور فرقہ وجود میں نہ اجائے لہزا فاعتزل تلک الفرقہ کلھا
    اور جہاں سے صحیح بات ملے اس پر عمل کیا جائے
     
  13. پیاسا

    پیاسا -: مشاق :-

    شمولیت:
    ‏جون 30, 2008
    پیغامات:
    324
    بھائی لوگ جو لوگوں کو دین کی طرف بلائے ، دعوت دے نماز پڑھنے کا کہے ، اچھا اخلاق ا پنانے کا کہے ، برائی سے منع کرے ، اچھائی کی طرف راغب کرے وہ آپ کو برا کیوں لگتا ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ سنی سنائی باتوں کو آگے پھیلانا بھی تو گمراہی ہے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ جسے تبلیغی جماعت سے اختلاف ہے اسے چاہیئے کہ چند دن انہیں کے ساتھ گزارے اور ان چیزوں کی نشاندھی ان سے کرے اور جواب طلب کرے۔۔۔۔۔۔۔۔
    کچھ لوگ ایسے ہیں کہ بچپن میں جو پڑھایا یا رٹایا گیا بس اسی کو “علم کا مینار “ سمجھ کر قانع ہو رہتے ہیں۔ ۔۔۔۔۔۔۔ بھئی حق کی تلا ش ہے تو دونوں رخ دیکھو نا کہ رٹائے ہوئے تعصب کی وجہ سے ایک رخ دیکھ کر فیصلہ کرو۔۔۔۔۔۔
    میں کافی تبلیغی جماعت کے ساتھ نکلا ہوں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ میں نے انہیں آج تک فروحی مسائل کا شکار نہیں دیکھا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ بس نماز کی طرف بلاتے ہیں ۔۔۔۔۔۔۔ کبھی کسی برے کام کی طرف انہوں نے نہیں بلایا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ جسے یقین نہ ہو وہ کسی ذریعے سے ریفرنڈم کرا کر دیکھ لے کہ کتنے لوگ اس نیک جماعت کی بدولت دین کی طرف واپس پلٹ چکے ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ حج کے بعد سب سے بڑا اجتماع کیا اسی جماعت کا نہیں ہوتا۔۔۔۔۔۔۔۔۔؟ میں تو کہتا ہوں یہی ایک دلیل بہت ہے اسے کے لیئے ۔۔۔۔۔ پوری دنیا سے لوگ اس میں شرکت کرنے پاکستان اور بنگلہ دیش آتے ہیں۔۔۔۔۔۔ کیا ان لاکھوں لوگوں میں عقل نہیں کہ وہ حق اور باطل کو نہ پہچان سکیں اور آپ تعصب کی بنا پر “ہوا“ کھڑا کیئے دے رہے ہیں۔
     
  14. مخلص

    مخلص -: محسن :-

    شمولیت:
    ‏اپریل 24, 2009
    پیغامات:
    291
    تبلیغی جماعت

    بھائی کسی جماعت میں افراد کی ذیادتی ان کی حقانیت پر دال نہیں ھے کسی مسئلہ میں آپ کا کسی سے اختلاف راے ھے تو بغیر نام لئے اجتماعی صورت میں مسئلہ کو بیان کرکے اصلاح کرنے کی کوشش کی جائے چہ جاے کہ نام لے کر کسی کو متنفر کیا جاے یا کسی خاص کی طرف بات کو فوکس کرکے تنقید کی جاے اگر آپ نام لیکر کسی پر تنقید کریں گے تو وہ آپ کی بات سننے کی بجائے آپ سے نفرت کرنے لگیں گے لہذا نام لیکر کسی پر تنقید نہ کریں جزاکم اللہ
     
  15. اہل الحدیث

    اہل الحدیث -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏مارچ 24, 2009
    پیغامات:
    5,050
  16. الطاف حسین راجپوت

    الطاف حسین راجپوت -: معاون :-

    شمولیت:
    ‏اپریل 27, 2009
    پیغامات:
    40
    حمایت اور اختلافات عموما اپنے اپنے عقائد کی بنیاد پر ہوتے ہیں جس فرقے سے آپ کا تعلق ہوگا آپ کو اپنے فرقے کا ہر فرد جنت کا مستحق نظر آئے گا اور دوسرے فرقے کے تمام افراد جہنم کے مستحق نظر آئیں گیں۔۔۔یہ ایک حقیقت ہے اس سے آپ آنکھ نہیں‌چرا سکتے۔۔لہذا چھوڑو اس بحث کو ۔۔۔انسا ن کی عادت ہے جس سے وہ نفرت کرتا ہے اسکی نیکی بھی برائی دکھے گی۔۔اور برائی تو عذاب الیم نظر آئے گی ۔۔اور جس سے محبت ہوگی اسکی ہر برائی پر تاویلوں‌کے ڈھیر لگا دینگے اور نیکی کو بزرگی بنا کر پیش کریں‌گے۔۔واہ رے انسان واہ۔۔۔
     
  17. مخلص

    مخلص -: محسن :-

    شمولیت:
    ‏اپریل 24, 2009
    پیغامات:
    291
    نہیں بھائی میں اھل حدیث ھوں لیکن متشدد اتنا نہیں ھوں کہ کسی کو اتنا گرائے کہ اس کو کافر کے درجہ تک پہنچائے ۔بہر حال ہر کسی کے بارے میں حسن ظن رکھتا ھوں اللہ سب کو ھدایت دے
     
  18. طالب نور

    طالب نور -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏مارچ 28, 2008
    پیغامات:
    366
    السلام علیکم!

    انبیاء کے سوا انسانوں میں کوئی معصوم نہیں۔ غلطیاں ہر کسی میں ہو سکتی ہیں اور عملی غلطیوں کو نشانہ بنا کر تنقید کرنا یقینا مستحسن عمل نہیں۔

    مگر جو لوگ اعتقادی اور نظریاتی خرابیوں کا شکار ہوں ان سے بچنا ضروری ہے ورنہ کیا شیعہ کی جماعتوں کے ساتھ نکلنا صحیح ہے کہ کچھ اچھائیاں تو ان مین بھی ہوں گی۔ اسی طرح تبلیغ کا کام تو بریلوی حضرات بھی کرتے ہین کیا تبلیغی جماعت کے سرکردہ اپنے ساتھ چلنے والوں کو دعوتِ اسلامی کے ساتھ نکلنے کی اجازت دینے کے لیئے تیار ہیں؟ اگر نہیں یقینا نہیں کہ خود تبلیغی جماعت کے نزدیک شیعہ یا بریلوی عملی نہیں بلکہ اعتقادی اور نظریاتی خرابیوں کا شکار ہیں اس لیئے ان کے ساتھ نکلنا ہرگز پسندیدہ نہیں۔

    اسی طرح جو لوگ تبلیغی جماعت کی اعتقادی اور نظریاتی خرابیوں سے واقف ہیں وہ اس سے عوام کو بچانے کی تگ و دو کرتے ہیں۔ ظاہر ہیں جن لوگوں کی تبلیغ کا دارومدار ان کتابوں اور ان علماء پر ہو جن کے نزدیک نبی صلی اللہ علیہ وسلم درود پڑھنے والے کی مدد کو پہنچتے ہیں۔ جن کے نزدیک قبروں سے فیض حاصل کرنا جائز اور درست ہو۔ جن کے نزدیک اللہ اور بندہ ایک ہو تو ایسے سنگین بدعی بلکہ صریح کفریہ و شرکیہ عقائد میں ملوث گروہ کی اصلیت بیان کرنا علمائے حق پر ضروری ہے۔ یہ بھی یاد رہے کہ ان چیزوں کی نشاندہی کا مقصد ہرگز یہ نہیں کہ بتانے والے یہ سمجھتے ہیں کہ تبلیغی جماعت کے ہر فرد کا یہ عقائد ہیں بلکہ بیان کرنے کا مقصد یہ ہے کہ تبلیغی جماعت کو چلانے والے اور بنانے والے ایسے ہی عقائد کے ھاملین رہے ہیں جن سے براءت کا اظہار ضروری ہے۔

    آخر میں ایک مزید بات عرض کرنا چاہتا ہوں وہ یہ کہ ہر جماعت کے بنانے والا اس کے کچھ بنیادی مقاصد کے حصول کے لیئے اس جماعت کو بناتا یا تشکیل دیتا ہے۔ آج تبلیغی جماعت اس بات کا پرچار کرتی نظر آتی ہے کہ وہ دین اسلام کی تبلیغ کے لیئے نکلی ہے جبکہ حقیقت یہ ہے کہ اس جماعت کا مقصد صرف اس دین کی تبلیغ ہے جو اشرف علی تھانوی صاحب یا دوسرے دیوبندی اکابرین کی کتابوں سے ظاہر ہے۔

    آج بھی آپ دیکھ لیجیئے کہ کیا کبھی تبلیغی جماعت میں کوئی دیوبندی علماء سے عقیدے میں اختلاف رکھنے والا آدمی مفتی یا امیر وغیرہ بنا ہے۔ یہ دعویٰ کہ ہم کسی مخصوص مکتبہ فکر سے تعلق نہیں رکھتے صرف عوام کو چلوں کے لیئے گھیرتے وقت ہی کیوں۔۔۔؟ اس بات کا عملی مظاہرہ کبھی تبلیغی جماعت کے امراء یا مفتیوں میں کیوں نظر نہیں آتا کہ ان اہم عہدوں پر وہی آتا ہے جو دیوبندی اکابرین کی ہر بات کو اپنا عقیدہ مانتا ہو۔

    جو باتیں میں نے اوپر کی ہیں ان کا مقصد صرف صورتِ حال کی وضاحت ہے۔ اگر کسی بھائی کو ان میں سے کسی بات کا بھی حوالہ درکار ہو تو دینے کے لیئے تیار ہوں ان شاء اللہ۔ مزید یہ بتا دینا بھی ضروری سمجھتا ہوں کہ ہمارا تبلیغی جماعت سے اختاف زاتی نہیں اگر وہ ان عقیدے کی خرابیوں سے اور ان کتابوں سے براءت کا اظہار کر دیں جن میں سے چند کی نشاندہی اوپر کی جا چکی ہے اور کتاب و سنت کو اپنا منہج بنا لیں تو ہمارا ان سے کوئی اختلاف نہیں۔ اللہ حق بات کا ساتھ دینے اور باطل سے براءت کی توفیق دے، آمین۔
     
  19. اعجاز علی شاہ

    اعجاز علی شاہ -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 10, 2007
    پیغامات:
    10,323
    ان شاء‌اللہ فضائل اعمال اور فضائل صدقات پر بہت جلدی تحقیقی مضمون مع اصلی سکینز پیش کروں گا پھر آپ لوگوں کو پتہ چلے گا کہ ہمارے سیدھے سادھے تبلیغی بھائی کس چیز کی تبلیغ کررہے ہیں اگرچہ میں ان کے اخلاص نیت اور دین کے جذبے پر کوئی شک نہیں کررہا ہوں کیوں‌کہ تبلیغی جماعت کے ساتھ میں کافی عرصہ رہا ہوں اور جو غلطیاں میں نے خود کی ہیں میں اچھی طرح آگاہ ہوں۔
    بس آپ لوگ تھوڑا صبر کریں ان شاء‌اللہ اس پر الگ سے ایک تھریڈ پوسٹ کروں گا۔ اگر اللہ نے زندگی دی۔
     
  20. اہل الحدیث

    اہل الحدیث -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏مارچ 24, 2009
    پیغامات:
    5,050
    السلام علیکم۔۔۔
    میں متشدد نہیں بھائی۔ میں نے اپنی بات نہیں کی۔ اس کتاب میں معروف علماء و محدثین کے فتاویٰ ہیں۔آپ خود ہی دیکھ لیں۔ باقی اتنا کہتا چلوں کہ میں تبلیغی جماعت کے اصل چہرے سے واقف ہوں۔ چار سال میں نے ان سے اسی جنگ میں گزارے ھیں کہ ھم لوگوں کو قرآن کا ترجمہ پڑھاتے تھے اور وہ ہمیں اس سے روکتے تھے۔تجربے کیلئے کسی تبلیغی کو صرف یہ کہہ کر دیکھیں کہ طارق جمیل ضعیف و موضوع روایات بیان کرتا ہے۔یا پھر فضائل اعمال میں یہ اغلاط ھیں۔۔
    جزاک اللہ
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں