تبلیغی جماعت میں اچھائیاں بھی تو ہیں ؟

ابوعکاشہ نے 'غیر اسلامی افکار و نظریات' میں ‏فروری 11, 2009 کو نیا موضوع شروع کیا

  1. اعجاز علی شاہ

    اعجاز علی شاہ -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 10, 2007
    پیغامات:
    10,323
    وعلیکم السلام
    بھائی یہ 2001 کی بات ہے میں پاکستان میں تھا اس وقت عمر بھی میری 19 سال تھی اس لئے تبلیغیوں کے چکر میں پھنس گیا تھا۔ صبح کی نماز کے بعد ہم لوگ رمضان میں‌فضائل اعمال پڑھتے تھے مسجد کے ایک کونے میں اور مسجد کا امام قرآن کا ترجمہ پڑھاتا ۔ جب ہم لوگ فضائل اعمال کی تعلیم ختم کرتے تو پھر جا کر ترجمہ میں بیٹھتے۔ نیز آپ دیکھیں گے کہ تبلیغی حضرات قرآن کا ترجمہ اتنا شوق سے نہیں سنتے جتنے فضائل اعمال اور فضائل صدقات کو۔
     
  2. اہل الحدیث

    اہل الحدیث -: رکن مکتبہ اسلامیہ :-

    شمولیت:
    ‏مارچ 24, 2009
    پیغامات:
    5,050
  3. اعجاز علی شاہ

    اعجاز علی شاہ -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 10, 2007
    پیغامات:
    10,323
    ایک غلط فہمی کا ازالہ:
    ممکن ہے ہمارا سیدھا سادھا تبلیغی بھائی یہ جواب دیں(جو کسی وقت میں بھی دیا کرتا تھا تبلیغ میں رہ کر) کہ جناب فضائل اعمال اور فضائل صدقات میں بھی تو قرآنی آیات اور احادیث ہیں ۔ تو اس کا سیدھا سا جواب حاضر ہے۔
    اولا: بے شک قرآنی آیات اور احادیث ہیں لیکن احادیث کچھ تو موضوع ہیں یا پھر صحیح حدیث تخریج کے ساتھ ذکر کرنے کے بعد اس کی تشریح میں مصنف نے بغیر حوالوں کے دوسری احادیث کا ذکر صرف اسطرح‌کیا ہے " ایک حدیث میں آتا ہے" ۔ اب اس طرح حدیث کی درجہ بندی کیسے کریں گے کہ کونسی موضوع ہے کونسی ضعیف اور کونسی صحیح۔
    ثانیا: قرآنی آیات کو اور احادیث کو اپنی مرضی کے معنی پہنائے گئے ہیں۔ آپ دیکھیں گے کہ صحیح حدیث ذکر کرنے کے بعد اس کی تشریح میں ایسے من گھڑت عقائد کی طرف دعوت دی گئی ہے کہ انسان توحید کے دائرے سے نکل جاتا ہے۔
    ثالثا: اگر بالفرض اس کو دلیل مانا جائے کہ فضائل اعمال میں قرآنی آیات اور احادیث بھی ہیں تو اسطرح تو قادیانیوں اور قبرپرستوں کی کتب میں بھی احادیث ہیں تو کیا ان کتب میں ہر بات ٹھیک ہے۔
    رابعا: فضائل اعمال اور فضائل صدقات میں من گھڑت قصے کثرت سے ہیں اور وہ بھی اس قدر ایمان شکن کہ الامن والحفیظ۔
     
    • پسندیدہ پسندیدہ x 1
  4. طاھر علی خان

    طاھر علی خان -: معاون :-

    شمولیت:
    ‏جنوری 30, 2009
    پیغامات:
    11
    ہمیں اسی فرقہ پرستی نے کمزور بنایا ہے ورنہ مسلمان کیا تعداد میں آج کیا کسی سے کم ہیں؟ میں سمجھتا ہوں کہ ہمیں ایک دوسرے میں خامیاں تلاش کرنے کی بجائے ایک دوسرے کی اصلاح حکمت سے کرنی چاہئے نہ کہ ایک دوسرے پر کیچھڑ اچھالنا۔ تبلیغی جماعت میں لاکھ برائیاں سہی مگر نہ تو وہ خارج از اسلام ہیں بلکہ ان کے جیسا اخلاص شاید ہی کسی دوسری جماعت میں میں نے دیکھا ہے۔
    باقی رہی بات اہل حدیث اور وہابیوں کی تو وہ لاکھ puritan سہی۔ کیا ان عربوں نے آج تک عجمی مسلمانوں کو اپنے برابر سمجھا ہے؟ دنیا میں بھر کے مسلمانوں میں اگر کوئی اپنے آپ کوباقیوں سے ممتاز سمجھتے ہیں تو وہ عرب ہیں۔ اور تو اور یہ تو اسرائیل سے بے دخل کئے گئےفلسطینیوں کو آج تک اپنے ملکوں میں مستقل شہریت نہیں دے سکے۔ یہ سب تیل کی دولت ہے جس کے سبب یہ عرب ویسے تو اسلام کے ٹھیکیدار بنتے ہیں مگر جب پورے اسلام کی بات آتی ہے تو اپنی آنکھیں بند کر لیتے ہیں۔
    آج یورپ کے کسی (غیر مسلم)ملک میں تو شہریت لینا آسان ہے مگر اپنے ہی مسلمان عرب ملکوں میں ہمیں فریضہ حج و عمرہ کے لئے بھی ویزہ کی ضرورت پڑتی ہے۔ کیا یہ ویزہ بھی اسلام میں ہے؟ قرآن پاک تو سب مسلمانوں کو جسد واحد سے تشبیہہ دیتا ہے۔
     
  5. طاھر علی خان

    طاھر علی خان -: معاون :-

    شمولیت:
    ‏جنوری 30, 2009
    پیغامات:
    11
    کیا یہ عرب 1923 سے پہلے کی صورت حال بھول گئے جب ان کے شاہ کی تنخواہ بھی بیرونی قرضوں سے پوری ہوتی تھی؟
    کاش ہم مسلمان ایک دوسرے کو کافر قرار دینے کی بجائے ایک دوسرے کوسمجھنےکی کوشش کریں۔ اللہ تعالیٰ ہم سب کو اپنے دین پر پورا پورا عمل کرنے کی توفیق عطا فرمائے۔ آمین
     
  6. kashifbilal

    kashifbilal -: معاون :-

    شمولیت:
    ‏مئی 22, 2009
    پیغامات:
    50
    Assalam O Alaikum!

    Bahut important aur garma garam behas chal rahe hai.
    Main bhi iss main thora hissa lena chah raha hoon.
    Umeed karta hoon ke aap loog mera baat ko apne apne maktab e fiqr se hat kar sochain gay.

    Ham aj kal ke Musalmano main sab se bari problem ye hai ke ham apne khilaf ya apne soch ke khilaf koi baat naeh sun sakte.

    main apna thora ta'aruf karwa doon tu shayad behtar ho.

    Main aik sidha sa muslim hoon, jis ka qareebi ta aluq Ahle hadis se bhi raha hai aur Tableeghi jamat se bhi raha hai.

    Iss liye main dono ke hawaley se baat karoon ga.


    Tableeghi jamat ke barey main ye kahoon ga ke ISS JAMAT MAIN KHAIR BHI HAI AUR SHAR BHI, LAIEKN KHAIR< SHAR PAR GHALIB HAI


    SHAR kis kisam ka hai ???
    jo sab se zayada aitiraz Tableeghi jamat par hotahai wo unn ki kitab FAZA e LE AMAL aur fazaele sadaqat par hota hai aur bila shuba iss main koi shak nahe ke in dono kitaboon main bahit se Ahadis Zaeef aur Bahit si Jhooti yani Mozo hain.

    Laiken aik cheez ka khayal faza el e Amal main bhi rakha gaya hai jo tanqeed karne waley bayan nahe karte.

    wo ye ke Har topic ka agahz main QUran ki ayat hain, phir Sahih hadis aur uss ke baad koi Zaeef ya MOzo hadis ka bayan aata hai.
    Agar aap iss lihaz se dekhain tu baat main utni Shidat baqi nahe rehti.

    Main hargiz Faza ele Amaal ka haq main nahe hoon ... main khud faza ele aamal ko pasand naeh karta.

    laiken, fazae le aamal ko sirf point bana kar loogon ko Aik MUKHLIS jamat se MUTANAFAR karna kahan ki door andeshi hai ?????

    aur jab ke ham Hazaroon nahe Lakhoon logon ki zindagiyan tabdeel hotey apni aankhoon se dekh rahe hain ,
    chahey zindagi tabdeel na ho, magar atleast loog nimaz tu parhna shuru kar dete hain ,kya ye kam hai?

    Aaj kitne Muslim hain jo Nimaz parhtey hain ??
    aur agar Tableeghio jamat ki wajah se koi Nimaz roza , ,zahiri shariyat ka paband ho rahah hai tu kya ye acha hai ya bura.

    Aur apne AHle Hadis aur Jamat ul Muslimeen bhaiyon se intahai mazrat ke sath arz karron ga ,
    ke app main se max. loogon ko ye tak nahe pata ke Hadis ki kitne Aqsam hain?

    hamain 3 words pata hain 1. Shahih 2. Zaeef aur 3. Mozo

    aur hamain ye bhi nahe pata ke kisi hadiz ko sahe,zaeef ya mozo kehne ki kya sharayat hain,

    aik normal Muslim tu kya ,ap apne ulama se poochain, chand aik ke siwa kisi Aalim ko sharaiyat tu kya Ahadis ki aqsam tak ka pata nahe ho ga.

    Tu tamam bhaiyoon se iltija hai ke Ache cheezon ko qabool karain aur Buri cheezon ko chor dain.
    Ahsan tareeqay se burai ko door karne ki koshihs karain .

    Main yahan tableeghi jamat waloon se nafrat karne waloon se yeh poochna chahta hoon .. ke kitne ratain app ALlah ke samne roye hain ke AE ALLAH YW LOOG ITNI MUSHAQAT KAR KE BHI SAHE RASTE SE DOOR HAIN< TU INHAIN HIDAYAT DE , jo hamarey NABI SAWW ki sunnat hai ke Allah se roo roo kar mangna.

    Ye haqeeqat hai ke AAm Tablegfghi ,jinhain samajh nahe hai, wo Quran ki tafseer nahe parhte, laiken jitney bhi parhe likhey tableeghi hai wo na sirf Quran tafseer ke sath parhtey hain , balkey Uss par amal ki bhi Kishish karte hain.


    Jazak ALLAH

    Regards
    Kashif Bilal
     
  7. اسداللہ شاہ

    اسداللہ شاہ -: محسن :-

    شمولیت:
    ‏مئی 5, 2009
    پیغامات:
    233
    اصلاحی بات اور تبلیغی جماعت

    السلام علیکم
    آپ حضرات نے تبلیغی جماعت پر اعتراض کیا جو مناسب تو نہیں پر فائدے سے کم بھی نہیں۔
    جناب آپ لوگ ان اہلحدیث حضرات اور مسلک اہلحدیث کی مساجد کےبارے میں کیا کہیں گے جہاں سارا سال تبلیغی جماعتیں (بقول آپکے )ضعیف احادیث پڑھتی ہیں۔
     
  8. کنعان

    کنعان محسن

    شمولیت:
    ‏مئی 18, 2009
    پیغامات:
    2,852
    request for all Muslims please be respected eachother

    بھائی صاحب میرا یہ کام نہیں کہ کسی کے مسئلے میں الجھوں پاکستان پہلے ہی ان حالات سے دو چار ھے کہ آپ اس کے لیے دعا کریں ۔ دنیا کی خبر ہونا بھی بہت ضروری ھے
    اگر آپ پاکستان سے باہر ہیں تو آپ کے گھر والے پاکستاں میں ہی موجود ہونگے ان کی خاطر پاکستان کو آپ کی دعاؤں کی ضرورت ھے

    آپ اس طرح کی تھریڈ بناتے ہیں جس کا حاصل ضرب سوائے لڑائی جھگڑا ایک دوسرے پر لعن تعن کے کچھ نہیں ہوتا
    ہر فرقے کے پاس اس کے بچاؤ کے پاورفل دلائل ہوتے ہیں اور اسی طرح ہر فرقے کے پاس دوسرے فرقے کے ویک پوائنٹ بھی ہوتے ہیں۔
    یو ٹیوب میں ہزاروں مناظرے موجود ہیں اور منظرہ میں دونوں سائڈمیں 17،17 علماء کا گروپ ہوتا ھے اور ہر فرقہ سامنے والے پر اتنی گندی زبان استعمال کر رہا ہوتا ھے کہ دیکھ کے شرم آتی ھے کسی بھی مناظرہ کا رزلٹ پازیٹو نہیں ہوتا

    انٹرنٹ میں کوئی بھی سند یافتہ علم نہیں ہوتا ! ہاں پاکستان میں بھوک افلاس اور صدقہ زکوۃ سے چلنے والے دینی اداروں سے بھاگے ہوئے طالب انٹر نٹ میں آ کے اسطرح کی تریڈ بناتے ہیں اور ہر روز ایک نئی جنگ کا اعلان ہوتا ھے

    پاکسان1947 سے اب تک عیسائیوں کے فنڈ سے چل رہا ھے اور جس کے بدلے حاکم کو کچھ نہ کچھ اس کے بدلے دینا پڑتا ھے زرداری صاحب پرائویٹ میں امریکہ کو یہ کہ آئے ہیں کہ کھبی بھی کچھ بھی کر سکتے ہیں اور آپ لوگ یہاں آپس میں لڑنے کی کوئی نہ کوئی رای نکالتے رہتے ہیں

    تریڈ وہ بنانی چاہیے جس پر کسی کو کوئی اعتراض نہ ہو اور کوئی اچھا سبق ملے۔ آپ اینٹ مارو گے تو سامنے والا پتھر تو آپ کو بھی مارے گا زخم دونوں کو آئے گا آپ انہی باتوں سے لڑتے رہیں گے لوگ آپ کا تماشا دیکھتے رہیں گے
    اسلامی سیکشن میں میری انٹری نہیں ہو رہی کیونکہ اس کے لیے 100 پوسٹ درکار ہیں وہاں ہر بندہ ماسوائے تبلیغ کے ایک دوسرے پر لعن طعن کر رہا ھے اور اپنے دل کو تسلی دیتے ہیں کہ تبلیغ کر رہے ہیں

    ہم عیسائیوں کے ملک میں رہتے ہیں اور یہاں مسلمانوں کے اتنے حقوق ہیں کہ آپ کو کیا کیا لکھوں اور جب آپ کو دیکھتے ہیں تو شرم آتی ھے

    اللہ آپ کے حال پر رحم کرے اور پاکستان کو شاد آباد رکھے امین
     
  9. ابو عبداللہ صغیر

    ابو عبداللہ صغیر -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏مئی 25, 2008
    پیغامات:
    1,979
    conan بھائی بہت خوب جزاک اللہ
     
  10. kashifbilal

    kashifbilal -: معاون :-

    شمولیت:
    ‏مئی 22, 2009
    پیغامات:
    50
    Conan Bhai!

    App ki batain bahut had tak darust hain,
    laiken agarkaheen koi ghalati hai, ya koi firqa ghalat kam kar raha hai, tu hamain AHSAN tareeqa se ussay samjhane ki koshihs zaroor karni chahiye.

    magar shart ye hai ke TANQEED barai TANQEED na ho, balkey TANQEED barai islah ho
    Regards
     
  11. اھل السنۃ

    اھل السنۃ -: محسن :-

    شمولیت:
    ‏جون 24, 2008
    پیغامات:
    295
    فضائل اعمال میں ایک جگہ یہ پڑھ کر حیران رہ گیا
    کہ ایک صاحب کئی کئی دن استنجے نہیں جاتے تھے اور پتہ ہے کیوں؟
    ان کو ہر جگہ انوار نظر آتے تھے
    کوئی تبلیغی اس کا مطلب تو سمجھا دے
     
  12. اھل السنۃ

    اھل السنۃ -: محسن :-

    شمولیت:
    ‏جون 24, 2008
    پیغامات:
    295
    اب تک کئی لوگوں سے پوچھ چکا ہوں
     
    Last edited by a moderator: ‏جولائی 30, 2009
  13. کنعان

    کنعان محسن

    شمولیت:
    ‏مئی 18, 2009
    پیغامات:
    2,852
    السلام علیکم
    بھائی صاحب آپ کا سوال دینی نقطہ نظر کے حساب سے انتشار پھیلانے والا سوال ھے

    نمبر1 جہاں آپ سوال کر رہے ہیں وہاں سوال نہیں کیا جاتا بلکہ اپنا علم سے روشنی پھیلائی جاتی ھے

    نمبر2 سوال جواب کے لیئے الگ سیکشن ھے بوقت حاجت وہاں پر سوالات پوچھے جاتے ہیں اور سوال پوچھنے والے کو اس کا انداز گفگو کو بھی سامنے رکھتے ہوئے جواب دئے جاتے ہیں

    نمبر3 سوال جب پوچھا جاتا ھے تو اس میں یہ کوئی شرط نہیں ہوتی کہ اس سوال کا جواب تبلیغی جماعت ہی دے ، اس کو جواب کوئی بھی دے سکتا ھے۔

    اسطرح کی باتیں لکھنے سے پرہیز کرنا چاہئے جس سے نقصاں کا خطرہ ہو

    شکریہ

    والسلام
     
Loading...

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں