زبان اور ادب

باذوق نے 'نقد و نظر' میں ‏اگست 23, 2007 کو نیا موضوع شروع کیا

موضوع کی کیفیت:
مزید جوابات کے لیے کھلا نہیں۔
  1. باذوق

    باذوق -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏جون 10, 2007
    پیغامات:
    5,623
    زبان اور ادب

    اُردو ادب کے اکثر قاری آج کل یوں شکایت کرتے نظر آتے ہیں :
    '' ہماری نظر میں اُردو ادب کو آج کل ایک مشکل شکل میں پیش کیا جا رہا ہے۔ اس لئے ہماری نئی نسل کو اُردو سے دلچسپی نہیں۔ اگر اُردو ادب کو کچھ آسان فہم بنا دیا جائے اور جدید علاماتی یا اشاراتی زبان میں پیش کرنے سے گریز کیا جائے تو شاید یہ زبان یا یہ ادب آج کی نئی نسل میں کچھ مقبول ہو سکے۔''

    اس سوال یا یوں سمجھئے کہ اس شکایت میں نہایت کھلے انداز میں خیالات کا اظہار کیا گیا ہے۔ اور یہاں 'زبان' اور 'ادب' کو ایک ہی صف میں کھڑا کر دیا گیا ہے۔
    یہ مسئلہ یعنی مشکل پسندی کا مسئلہ ادب کا ہے ، زبان کا نہیں۔ اور یہ صورتِ حال اُردو میں ہی نہیں بلکہ دنیا کی ہر زبان کے ادب میں پائی جاتی ہے۔ ہندی زبان ہی کو لے لیں۔ ہندی میں تو اتنی تحریکیں اور رحجانات بدلتے رہے ہیں کہ اس کا حساب ہی نہیں۔ یہ 'ناکہانی' اور 'اکویتا' (یعنی ایسی کویتا جس میں کویتا پن نہ ہو)، یا بھوکی پیڑھی (یعنی 'بھوکی نسل') ... یہ سب تحریکیں ہندی میں چل رہی ہیں۔

    ہماری نسل کو اُردو سے دلچسپی نہیں، یہ ایک علحٰدہ مسئلہ ہے۔ اس کا ادب کی مشکل پسندی سے کوئی تعلق نہیں۔
    آج سے سو ، دیڑھ سو سال پہلے جب متحدہ ہندوستان میں اُردو کا طوطی بول رہا تھا ، غالب جیسا شاعر پیدا ہوا ، جو مشکل پسندی میں ثانی نہیں رکھتا تھا۔
    زبان کی ترویج و تشکیل کا ادب کی تحریکوں سے بہت گہرا تعلق ہوتا ہے ۔ اسے کسی بھی عہد میں ختم نہیں کیا جا سکتا۔ عوامی زبان کی شاعری نظیر اکبر آبادی نے کی تو دوسری طرف پریم چند نے عوامی زبان میں افسانے / ناول لکھے۔ لیکن اس سے کوئی فرق نہیں پڑا۔

    اور پھر ہم کو ادیبوں یا شاعروں سے یہ مطالبہ نہیں کرنا چاہئے کہ آسان زبان میں ادب تخلیق کرو۔ ادب کے ہزار ہا پہلو ہوتے ہیں۔ کئی ایسے ادیب و شاعر بھی ہوتے ہیں جو آسان زبان میں ادب تخلیق کرتے ہیں اور کئی ایسے ہوتے ہیں جو مشکل پسند ہوتے ہیں۔ اور اس عمل سے زبان کو کچھ نقصان نہیں پہنچتا بلکہ زبان ہر اعتبار سے مالا مال ہوتی جاتی ہے !!
     
  2. ابن عمر

    ابن عمر رحمہ اللہ بانی اردو مجلس فورم

    شمولیت:
    ‏نومبر 16, 2006
    پیغامات:
    13,354
  3. bia786asrfamily

    bia786asrfamily -: ممتاز :-

    شمولیت:
    ‏اگست 15, 2007
    پیغامات:
    1,951
    باذوق بھائی بہت اعلیٰ قسم کی تحریر شئیر کرنے کا بہت شکریہ ..
     
  4. رانا ابو بجاش

    رانا ابو بجاش ركن مجلس علماء

    شمولیت:
    ‏جولائی 15, 2009
    پیغامات:
    80
    اصل میں ادب کے حقیقی تصور کو اجاگر کرنے کی ضرورت ہے۔ارباب مذہب میں بھی بڑے بلند پایہ ادیب ہیں مثلا مولانا ابوالکلام آزاد۔ مولانا عبدالماجد دریابادی نے(جو خود ایک عظیم ادیب تھے)آزاد کی اس حیثیت کو اجاگر کیا ہے۔دریابادی کی اس سے متعلقہ تحریریں ڈاکٹر ابو سلمان شاہجہانپوری نے اردو کا ادیب اعظم کے زیر عنوان مرتب کرکے شائع کیا ہے۔
     
Loading...
موضوع کی کیفیت:
مزید جوابات کے لیے کھلا نہیں۔

اردو مجلس کو دوسروں تک پہنچائیں